Dono aalam ke Sarkar aa Jaiye – Naat Lyrics in Urdu

islamkidunya
Dono aalam ke Sarkar aa Jaiye - Naat Lyrics in Urdu

Dono aalam ke Sarkar aa Jaiye – Lyrics 

بہرِ دیدار مشتاق ہے ہر نظر دونوں عالم کے سرکارآجائیے

Behre deedar mushtaq hai har nazar Dono aalam ke Sarkar aa jaiye
Chandni raat hai aur pichla pahar Dono aalam ke Sarkar aa jaie

Ab toh aa jaiye ab toh aa jaiye

Sidratul muntaha arsho baagh e iram Hr jaga par chuke hain nishane qadam
Ab to ik baar apne ghulamo k ghr dono alam k sarkar ajaie

Ab to ajaiye ab to ajaiye

Mere gulshan ko ik baar mehkaiye Apne jalwo ki baarish me nahalaiye
Deeda e Shauk ko kijiye paarwar Dono aalam ke Sarkar aa jaiye

Ab toh aa jaiye ab toh aa jaiye

Saamne jalwagar Paikar e Noor ho Munkiro ka bi Sarkaar shak door ho
Karke tabdeel ik din Libaas e Bashar Dono aalam ke Sarkar aa jaiye

Ab toh aa jaiye ab toh aa jaiye

Shaam e umeed ka ab sawera huwa Suu e Taiba nigaho me dera huwa
Bichh gaye raah me farsh Qalb o Jjigar Dono aalam ke Sarkar aa jaiye

Ab toh aa jaiye ab toh aa jaiye

Aakhari wakt hai ek bimaar ka Dil machal ne laga shoke deedar ka
Buj na jaaye kahin ye charage sahar Dono aalam ke Sarkaar aa jaiye

Ab toh aa jaiye ab toh aa jaiye

Shaam e ghurbat hai aur, sheher khamosh hai Eik Arhsad akela kafan poshhai
Khauf ki hai ghari waqt hai purkhatar Dono aalam ke Sarkar aa jaiye

Ab toh aa jaiye ab toh aa jaiye

بہرِ دیدار مشتاق ہے ہر نظر دونوں عالم کے سرکارآجائیے
چاندنی رات ہے اور پچھلا پہر دونوں عالم کے سرکار آجائیے

سدرۃ المنتہیٰ، عرش وباغِ ارم ہر جگہ پڑچکے ہیں نشانِ قدم
اب تو اک بار اپنے غلاموں کے گھر دونوں عالم کے سرکار آجائیے

شامِ امید کا اب سویرا ہوا شہرِ طیبہ نگاہوں کا ڈیرا ہوا
بچھ گئے راہ میں فرشِ قلب ونظر دونوں عالم کے سرکار آجائیے

سامنے جلوہ گر پیکرِ نور ہو منکروں کا بھی سرکار شک دور ہو
کرکے تبدیل اک دن لباسِ بشر دونوں عالم کے سرکار آجائیے

دل کا ٹوٹا ہوا آبگینہ لیے جذبۂ اشتیاقِ مدینہ لیے
کتنے گھائل کھڑے ہیں سرِ رہ گزر دونوں عالم کے سرکار آجائیے

میرے گلشن کو اک بار مہکائیے اپنے جلوئوں کی بارش میں نہلائیے
دیدۂ شوق کو کیجئے بہرہ ور دونوں عالم کے سرکار آجائیے

تاابد اپنی قسمت پہ نازاں رہیں خاک ہوجائیں پھر بھی فروزاں رہیں
دل کی بزمِ تمنا میں اک بار اگر دونوں عالم کے سرکار آجائیے

آخری وقت ہے ایک بیمار کا دل مچلنے لگا شوقِ دیدار کا
بجھ نہ جائے کہیں یہ چراغِ سحر دونوں عالم کے سرکار آجائیے

شامِ غربت ہے اور شہر خاموش ہے ایک ارشدؔ اکیلا کفن پوش ہے
خوف کی ہے گھڑی وقت ہے پُر خطر دونوں عالم کے سرکار آجائے

Dono aalam ke Sarkaar aa Jaiye – Asad Raza Attari 

Read More;

Comments

Leave a Reply

Next Post

Ooj Paana Mere Hazoor Ka Hai - Naat Lyrics in Urdu

Ooj Paana Mere Hazoor Ka Hai – Naat Lyrics in Urdu Ooj Paana Mere Hazoor Ka HaiArsh Jaana Mere Hazoor Ka Hai Arsh Se Bhi Paray Woh Ho AeAana Jaana Mere Hazoor Ka Hai Shadiyane Bajay Shab e MairajAaj Jana Meray Huzoor Ka Hai Haq Ta’aala Ka Jalwa Raaton RaatDaikh […]
Ooj Paana Mere Hazoor Ka Hai - Naat Lyrics in Urdu
%d bloggers like this: