چلو دیارِ نبیﷺ کی جانب درود لب پر سجا سجا کر

islamkidunya
CHALO DIYAAR-E-NABI KI JAANIB DUROOD LAB PAR SAJA SAJA KAR

اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلٰی مُحَمَّدٍ وَّعَلٰٓی اٰلِ مُحَمَّدٍ کَمَا صَلَّیْتَ عَلٰٓی اِبْرَاھِیْمَ وَعَلٰٓی اٰلِ اِبْرَاھِیْمَ اِنَّکَ حَمِیْدٌ مَّجِیْدٌ

اَللّٰھُمَّ بَارِکْ عَلٰی مُحَمَّدٍ وَّعَلٰٓی اٰلِ مُحَمَّدٍ کَمَا بَارَکْتَ عَلٰٓی اِبْرَاھِیْمَ وَعَلٰٓی اٰلِ اِبْرَاھِیْمَ اِنَّکَ حَمِیْدٌ مَّجِیْدٌ

ALLAHUMMA SALLE ALA SAYIDDINA

WA MAULANA MUHAMMADIN NABI YIL UMMI

WA ALA AALAYHI WA ASHAABAYHI WA BARIK WASALAM

CHALO DIYAAR-E-NABI KI JAANIB DUROOD LAB PAR SAJA SAJA KAR

چلو دیارِ نبیﷺ کی جانب درود لب پر سجا سجا کر

چلو دیارِ نبیﷺ کی جانب درود لب پر سجا سجا کر
بہار لوٹیں گے ہم کرم کی دلوں کو دامن بنا بنا کر

نہ ان کے جیسا سخی ہے کوئی نہ ان کے جیسا غنی ہے کوئی
وہ بے نواؤں کو ہر جگہ سے نوازتے ہیں بلا بلا کر

جو شاہکار ان کی یاد کے ہیں امانتاً عشق نے دیئے ہیں
چراغِ منزل بنیں گے اک دن رکھو وہ آنسو بچا بچا کر

چلو دیارِ نبیﷺ کی جانب درود لب پر سجا سجا کر

ہماری ساری ضرورتوں پر کفالتوں کی نظر ہے ان کی
وہ جھولیاں بھر رہے ہیں سب کی کرم کے موتی لٹا لٹا کر 

وہ راہیں اب تک سجی ہوئی ہیں دلوں کا کعبہ بنی ہوئی ہیں
جہاں جہاں سے حضورﷺ گزرے ہیں نقش اپنا جما جما کر

چلو دیارِ نبیﷺ کی جانب درود لب پر سجا سجا کر

کبھی جو میرے غریب خانے کی آپﷺآکر جگائیں قسمت
میں خیر مقدم کے گیت گاؤنگا اپنی پلکیں بچھا بچھا کر

تمہاری نسبت کے میں تصدق اساسِ عظمت ہے یہ تعلق
کہ انبیاء سرخرو ہوئے ہیں سرِ اطاعت جھکا جھکا کر

چلو دیارِ نبیﷺ کی جانب درود لب پر سجا سجا کر

ہے ان کو امت سے پیار کتنا کرم ہے رحمت شعار کتنا
ہمارے جرموں کو دھو رہے ہیں حضور آنسو بہا بہا کر

میں ایسا عاصی ہوں جس کی جھولی میں کوئی حسنِ عمل نہیں ہے
مگر وہ احسان کر رہے ہیں خطائیں میری چھپا چھپا کر

یہی اساسِ عمل ہے میری اسی سے بگڑی بنی ہے میری
سمیٹتا ہوں کرم خدا کا نبیﷺ کی نعتیں سنا سنا کر

چلو دیارِ نبیﷺ کی جانب درود لب پر سجا سجا کر

وہ آئینہ ہے رُخِ محمدﷺ کہ جس کا جوہر جمالِ رب ہے
میں دیکھ لیتا ہوں سارے جلوے تصور ان کا جما جما کر

کبھی تو برسے گا ابرِ رحمت کبھی تو جاگے گی میری قسمت
کچھ اشک تیار کر رہا ہوں میں سوزِ الفت بڑھا بڑھا کر

چلو دیارِ نبیﷺ کی جانب درود لب پر سجا سجا کر

میں تیرے قربان میرے ساقی رہے نہ ارمان کوئی باقی
مجھے محبت کا حوصلہ دے نظر سے اپنی پلا پلا کر

مٹانے والے ہی مٹ گئے ہیں کہ تیرے سائے میں پل رہے ہیں 
یہ تجربہ کر چکی ہے دنیا ہمیں ابھی تک مٹا مٹا کر

اگر مقدر نے یاوری کی اگر مدینے گیا میں خالدؔ
قدم قدم خاک اس گلی کی میں چوم لوں گا اٹھا اٹھا کر

چلو دیارِ نبیﷺ کی جانب درود لب پر سجا سجا کر
بہار لوٹیں گے ہم کرم کی دلوں کو دامن بنا بنا کر

بے خُود کِیے دیتے ہیں اَندازِ حِجَابَانَہ​

علامات قیامت میں سب سے پہلے ظاہر ہونے والی نشانی

رسول اکرم ﷺ کے پسندیدہ مشروبات

استغفار و توبہ – احادیث کی روشنی میں

Comments

Leave a Reply

Next Post

آمنہ بی بی کے گلشن میں آئی ہے تازہ بہار 

آمنہ بی بی کے گلشن میں آئی ہے تازہ بہار  Amna Bibi Ke Gulshan Mein Ayi Hai Taza Bahar اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلٰی مُحَمَّدٍ وَّعَلٰٓی اٰلِ مُحَمَّدٍ کَمَا صَلَّیْتَ عَلٰٓی اِبْرَاھِیْمَ وَعَلٰٓی اٰلِ اِبْرَاھِیْمَ اِنَّکَ حَمِیْدٌ مَّجِیْدٌ اَللّٰھُمَّ بَارِکْ عَلٰی مُحَمَّدٍ وَّعَلٰٓی اٰلِ مُحَمَّدٍ کَمَا بَارَکْتَ عَلٰٓی اِبْرَاھِیْمَ وَعَلٰٓی اٰلِ اِبْرَاھِیْمَ […]
آمنہ بی بی کے گلشن میں آئی ہے تازہ بہار 
%d bloggers like this: