لحد میں عشقِ رُخِ شہ کا داغ لے کے چلے

islamkidunya
لحد میں عشقِ رُخِ شہ کا داغ لے کے چلے

نعتِ رسولِ کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم – لحد میں عشقِ رُخِ شہ کا داغ لے کے چلے

LAHAD MEIN ISHQE RUKHE SHAH KA DAAGH LE KE CHALE – NAAT LYRICS

اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلٰی مُحَمَّدٍ وَّعَلٰٓی اٰلِ مُحَمَّدٍ کَمَا صَلَّیْتَ عَلٰٓی اِبْرَاھِیْمَ وَعَلٰٓی اٰلِ اِبْرَاھِیْمَ اِنَّکَ حَمِیْدٌ مَّجِیْدٌ

اَللّٰھُمَّ بَارِکْ عَلٰی مُحَمَّدٍ وَّعَلٰٓی اٰلِ مُحَمَّدٍ کَمَا بَارَکْتَ عَلٰٓی اِبْرَاھِیْمَ وَعَلٰٓی اٰلِ اِبْرَاھِیْمَ اِنَّکَ حَمِیْدٌ مَّجِیْدٌ

لحد میں عشقِ رُخِ شہ کا داغ لے کے چلے

اندھیری رات سُنی تھی چراغ لے کے چلے

ترے غلاموں کا نقشِ قدم ہے راہِ خدا

وہ کیا بہک سکے جو یہ سراغ لے کے چلے

جنان بنےگی محبّانِ چار یار کی قبر

جو اپنے سینہ میں یہ چار باغ لے کے چلے

گیے، زیارتِ در کی، صدر آہ واپس آئے

نظر کے اشک پچھے دل کا داغ لے کے چلے

مدینہ جانِ جناں وجہاں ہے وہ سن لیں

جنہیں جنون جناں سوئے زاغ لے کے چلے

ترے سحاب سخن سے نہ نم کہ نم سے بھی کم

بلیغ بہر بلاغت بلاغ لے کے چلے

حضور طیبہ سے بھی کوئی کام بڑھ کر ہے

کہ جھوٹےحیلۂ مکر و فراغ لے کے چلے

تمہارے وصف جمال و کمال میں جبریل

محال ہے کہ مجال و مساغ لے کے چلے

گلہ نہیں ہے مُرید رشید شیطاں سے

کہ اس کے وسعت علمی کا لاغ لے کے چلے

ہر ایک اپنےبڑے کی بڑائی کرتا ہے

ہر ایک مغبچہ مغ کا ایاغ لے کے چلے

مگر خدا پہ جو دھبّہ دروغ کا تھوپا

یہ کس لعیں کی غلامی کا داغ لے کے چلے

وقوع کذب کے معنی دُرست اور قدوس

ہیے کی پھوٹے عجب سبز باغ لے کے چلے

جہاں میں کوئی بھی کافر سا کافر ایسا ہے

کہ اپنے رب پہ سفاہت کا داغ لے کے چلے

پڑی ہے اندھے کو عادت کہ شور بے ہی سے کھائے

بٹیر ہاتھ نہ آئی تو زاغ لے کے چلے

خبیث بہر خبیثہ خبیثہ بہر خبیث

کہ ساتھ جنس کو بازو وکلاغ لے کے چلے

جو دین کوؤں کو دے بیٹھے ان کو یکساں ہے

کلاغ لے کے چلے یا الاغ لے کے چلے

رضؔا کسی سگِ طیبہ کے پاؤں بھی چومے

تم اور آہ کہ اتنا دماغ لے کے چلے

 

اُرْدُو نعت لیرکس

ان کی مہک نے دل کے غنچے کھلا دیئے ہیں

تصور میں منظر عجیب آ رہا ہے

روک لیتی ہے آپ کی نسبت تیر جتنے بھی ہم پہ چلتے ہیں

عارضِ شمس و قمر سے بھی ہیں انور ایڑیاں

Comments

Leave a Reply

Next Post

Allah Ne Ye Shan Barhai Tere Dar Ki

Allah Ne Ye Shan Barhai Tere Dar Ki – Naat Lyrics in Urdu Allah Ne Ye Shan Barhai Tere Dar Ki Bakhshi Hai Malaik Ko Gadai Tere Dar Ki Paane Ko To Khursheed o Qamr Charkh Ne Paaye Kia Paya Agar Khak Na Paai Tere Dar Ki Hooron Ne Malaik […]
Allah Ne Ye Shan Barhai Tere Dar Ki
%d bloggers like this: