رُخ دن ہے یا مہرِ سما ، یہ بھی نہیں وہ بھی نہیں

islamkidunya
RUKH DIN HAI YA MEHRE SAMAA YE BHI NAHI WO BHI NAHI

نعت ِ رسول ِ کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم – رُخ دن ہے یا مہرِ سما ، یہ بھی نہیں وہ بھی نہیں

RUKH DIN HAI YA MEHRE SAMAA YE BHI NAHI WO BHI NAHI

COLLECTION OF NAAT LYRICS

اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلٰی مُحَمَّدٍ وَّعَلٰٓی اٰلِ مُحَمَّدٍ کَمَا صَلَّیْتَ عَلٰٓی اِبْرَاھِیْمَ وَعَلٰٓی اٰلِ اِبْرَاھِیْمَ اِنَّکَ حَمِیْدٌ مَّجِیْدٌ

اَللّٰھُمَّ بَارِکْ عَلٰی مُحَمَّدٍ وَّعَلٰٓی اٰلِ مُحَمَّدٍ کَمَا بَارَکْتَ عَلٰٓی اِبْرَاھِیْمَ وَعَلٰٓی اٰلِ اِبْرَاھِیْمَ اِنَّکَ حَمِیْدٌ مَّجِیْدٌ

رُخ دن ہے یا مہرِ سما ، یہ بھی نہیں وہ بھی نہیں

شب زلف یا مشکِ ختا ، یہ بھی نہیں وہ بھی نہیں

ممکن میں یہ قدرت کہاں واجب میں عبدیت کہاں

حیراں ہوں یہ بھی ہے خطا ، یہ بھی نہیں وہ بھی نہیں

حق یہ کہ ہیں عبدِ اِلٰہ، اور عالمِ امکاں کے شاہ

برزخ ہیں وہ سرِّ خدا ، یہ بھی نہیں وہ بھی نہیں

بلبل نے گُل اُن کو کہا، قمری نے سروِ جانفزا

حیرت نے جھنجھلا کر کہا، یہ بھی نہیں وہ بھی نہیں

خورشید تھا کس زور پر، کیا بڑھ کے چمکا تھا قمر

بے پردہ جب وہ رُخ ہوا، یہ بھی نہیں وہ بھی نہیں

ڈر تھا کہ عصیاں کی سزا اب ہو گی یا روزِ جزا

دی اُن کی رحمت نے صدا، یہ بھی نہیں وہ بھی نہیں

کوئی ہے نازاں زہد پر ، یا حسن توبہ ہے سِپر

یاں فقط تیری عطا ، یہ بھی نہیں وہ بھی نہیں

دن لَہَو میں کھونا تجھے ، شب صبح تک سونا تجھے

شرمِ نبی خوفِ خدا، یہ بھی نہیں وہ بھی نہیں

رزقِ خدا کھایا کِیا ، فرمانِ حق ٹالا کِیا

شکرِ کرم ترسِ سزا ، یہ بھی نہیں وہ بھی نہیں

ہے بلبلِ رنگیں رضا یا طُوطیِ نغمہ سرا

حق یہ کہ واصف ہے ترا، یہ بھی نہیں وہ بھی نہیں

اُرْدُو نعت لیرکس

پھر کے گلی گلی تباہ ٹھوکریں سب کی کھائے کیوں

تو ہے وہ غوث کہ ہر غوث ہے شیدا تیرا

کوئی سلیقہ ہے آرزو کا ، نہ بندگی میری بندگی ہے

مولاي صلــــي وسلــــم دائمـــاً أبــــدا – قصیدہ بردہ شریف

Comments

Leave a Reply

Next Post

کیا ہی ذوق افزا شفاعت ہے تمھاری واہ واہ

نعت ِ رسول ِ کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم – کیا ہی ذوق افزا شفاعت ہے تمھاری واہ واہ KYA HI ZAUK AFZA SHAFA’AT HAI TUMHARI WAH WAH COLLECTION OF NAAT LYRICS اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلٰی مُحَمَّدٍ وَّعَلٰٓی اٰلِ مُحَمَّدٍ کَمَا صَلَّیْتَ عَلٰٓی اِبْرَاھِیْمَ وَعَلٰٓی اٰلِ اِبْرَاھِیْمَ اِنَّکَ حَمِیْدٌ مَّجِیْدٌ […]
KYA HI ZAUK AFZA SHAFA’AT HAI TUMHARI WAH WAH
%d bloggers like this: