Site icon ISLAM KI DUNYA

Rahi Umar Bhar Jo Anis-e-Jaan – رہی عمر بھر جو انیسِ جاں – Naat Lyrics

Rahi Umar Bhar Jo Anis-e-Jaan - رہی عمر بھر جو انیسِ جاں - Naat Lyrics

Rahi Umar Bhar Jo Anis-e-Jaan – Naat Lyrics

رہی عمر بھر جو انیسِ جاں

Rahi umar bhar jo Anis-e-jaan, woh bus arzu-e-Nabi rahi

Kabhi ashk ban kay rawan howi, kabhi dard ban kay dabi rahi

Shah-e-Deen Ke Fikr-o-Nigah Say Mite Nasal-o-Rang ke Falsafay

Na Raha Tafakhir-e-Mansabin, Na Rao’onate Nasabi Rahi

Sir-e-dash-e-zeest barus gia, jo sahib-e-rahmat-e-Mustafa

Na khird ki be-samari rahi, na janoon ki tashna labi rahi

Thi Hazar Tairgi Fitan, Na Bhatak Saka  mera faqr-o-Fan

Meri Kainat-e-khayal mein nazar-e-shah-e-Arabi Rahi

Woh sofa ka mehr-e-munir hay, talab us ki noor-e-zameer hay

Yehi rozgar-e-faqir hay, yehi elteja-e-shabii rahi

Woh sa’atain thain saroor ki, wahi din thay hasil-e-zindagi

Ba Hazoor-e-Shafe-e-afshaan, meri jin dinu talabi rahi

رہی عمر بھر جو انیسِ جاں وہ بس آرزوئے نبی رہی
کبھی اشک بن کے رواں ہوئی ، کبھی درد بن کے دبی رہی

شہ دیں کے فکر و نگاہ سے مٹے نسل و رنگ کے فلسفے
نہ رہا تفاخرِ منصبی ، نہ رعونتِ نسبی رہی

سرِ دشتِ زیست برس گیا ، جو سحابِ رحمتِ مصطفے
نہ خرد کی بے ثمری رہی ، نہ جنوں کی جامہ دری رہی

تھی ہزار تیرگی فتن ، نہ بھٹک سکا مرا فکر و فن
مری کائناتِ خیال میں نظرِ شہِ عربی رہی

وہ صفا کا مہرِ منیر ہے ، طلب اس کی نورِ ضمیر ہے
یہی روزگارِ فقیر ہے ، یہی التجائے شبی رہی

وہی ساعتیں تھیں سرور کی ، وہی دن تھے حاصل زندگی
بحضور شافع ِامتاں مری جن دنوں طلبی رہی

از حفیظ تائب​

Syed Zabib Masood | Rahee Umer Bhar Jo Anees Say Jaan

 

Syed Zabib Masood 2018 | | Rahi Umar Jo Anees Say Jaan

Read More Naat Lyrics:

Comments
Exit mobile version