Site icon ISLAM KI DUNYA

Pekar E Dilruba Ban Kay Aaya – پیکرِ دلربا بن کے آیا – Naat Lyrics

Pekar E Dilruba Ban Kay Aaya - پیکرِ دلربا بن کے آیا - Naat Lyrics

Pekar E Dilruba Ban Kay Aaya

پیکرِ دلربا بن کے آیا ، روحِ ارض و سما بن کے آیا​

Pekar e dilruba ban kay aaya, ruh e arzo sama ban kay aaya
Sab rasul e khuda ban kay aa-ay, wo habeeb e khuda ban kay aaya

Hazrat e Amina ka dulaara, wo Haleema ki aankhon ka taara
Wo shikasta dilon ka sahaara, bay kason ki dua ban kay aaya

Dast e qudrat nay esa sajaya, husn e takhleeq ko rashk aaya
Jiss ka paya kisi nay na paya, wo khuda ki raza ban kay aaya

Taajdaaron nay di he salami, baadshahon nay ki he ghulaami
Bay misaal uss ka ism e giraami, Mujtaba Mustafa ban kay aaya

Wo Nabi rahmat e aalameen hai, jo bhi unkay zair e nagiin hai
Esa ghamkhuar daykha nahiin he, jesa kherulwara ban kay aaya

He zahoori barri shan unki, madah karta he quraan unki
Naat parrta he hassaan unki, jo mayra rahnuma ban kay aaya

پیکرِ دلربا بن کے آیا ، روحِ ارض و سما بن کے آیا​

پیکرِ دلربا بن کے آیا ، روحِ ارض و سما بن کے آیا​
سب رسولِ خدا بن آئے ، وہ حبیبِ خدا بن کے آیا​
حضرتِ آمنہ کا دلارا ، وہ حلیمہ کی آنکھوں کا تارا​
وہ شکستہ دلوں کا سہارا ، بے کسوں کی دعا بن کے آیا​
تاجداروں نے دی ہے سلامی ، بادشاہوں نے کی ہے غلامی​
بے مثال اس کا اسمِ گرامی ، مصطفی مجتبی بن کے آیا​
دستِ قدرت نے ایسا سجایا ، حسنِ تخلیق کو رشک آیا​
جس کا پایہ کسی نے پایا ، وہ خدا کی رضا بن کے آیا​
وہ نبی رحمتِ عالمیں ہیں جو بھی ہے اس کے زیرِ نگیں ہے​
ایسا مختار دیکھا نہیں ہے ، جیسا خیر الوری بن کے آیا​
مسندِ ناز عرشِ بریں ہے ، بوریا کس کا فرشِ زمیں ہے​
در کا دربان روح الامیں ہے ، سرورِ انبیاء بن کے آیا​
کیا ظہوری لکھے شان اس کی ، مدح کرتا ہے قرآن اس کی​
نعت پڑھتا ہے حسان اس کی ، جو میرا رہنما بن کے آیا​

Pekr e Dil Ruba Ban Ke Aya By Zohaib Ashrafi

YouTube Poster

Read More:

Comments
Exit mobile version