Site icon ISLAM KI DUNYA

گزرے جس راہ سے وہ سیدِ والا ہو کر

GUZRE JIS RAH SE WOH SAYYIDE WALA HO KAR

نعتِ رسول کریم صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم – گزرے جس راہ سے وہ سیدِ والا ہو کر

GUZRE JIS RAH SE WOH SAYYIDE WALA HO KAR

اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلٰی مُحَمَّدٍ وَّعَلٰٓی اٰلِ مُحَمَّدٍ کَمَا صَلَّیْتَ عَلٰٓی اِبْرَاھِیْمَ وَعَلٰٓی اٰلِ اِبْرَاھِیْمَ اِنَّکَ حَمِیْدٌ مَّجِیْدٌ

اَللّٰھُمَّ بَارِکْ عَلٰی مُحَمَّدٍ وَّعَلٰٓی اٰلِ مُحَمَّدٍ کَمَا بَارَکْتَ عَلٰٓی اِبْرَاھِیْمَ وَعَلٰٓی اٰلِ اِبْرَاھِیْمَ اِنَّکَ حَمِیْدٌ مَّجِیْدٌ

گزرے جس راہ سے وہ سیدِ والا ہو کر

رہ گئی ساری زمیں عنبرِ سارا ہو کر

رخِ انور کی تجلی جو قمر نے دیکھی

رہ گیا بوسہ وہ نقشِ کفِ پا ہو کر

وائے محرومیِ قسمت کہ میں پھر اب کی برس

رہ گیا ہمرہِ زوّارِ مدینہ ہو کر

چمنِ طیبہ ہے وہ باغ کہ مرغ ِ سدرہ

برسوں چہکے ہیں جہاں بلبلِ شیدا ہو کر

صرصرِ دشتِ مدینہ کا مگر آیا خیال

رشکِ گلشن جو بنا غنچہ ءِ دل وا ہو کر

گوشِ شہ کہتے ہیں فریاد رسی کو ہم ہیں

وعدہ ءِ چشم ؟ بخشائیں گے گویا ہو کر

پائے شہ پر گرے یارب تپشِ مہر سے جب

دلِ بے تاب اڑے حشر میں پارا ہو کر

ہے یہ امید رضا کو تری رحمت سے شہا

نہ ہو زندانیِ دوزخ ترا بندہ ہو کر

Guzray Jis Rah Say Woh Syed Wala Ho Kar | Rang e Raza 2016

اُرْدُو نعت لیرکس

کوئی تو ہے جو نظامِ ہستی چلا رہا ہے ، وہی خدا ہے

لطف ان کا عام ہو ہی جائے گا

لو مدینے کی تجلی سے لگائے ہوئے ہیں

(لَم یَاتِ نَظیرُکَ فِی نَظَر مثل تو نہ شد پیدا جانا (مع ترجمہ

COLLECTION OF NAAT LYRICS

Comments
Exit mobile version