Site icon ISLAM KI DUNYA

درِ نبی پر پڑا رہوں گا پڑے ہی رہنے سے کام ہوگا

Muhammad (PBUH) The Prophet of Islam

نعت رسول کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم

در نبی پہ پڑا رہوں گا، پڑے رہنے سے کام ہو گا

اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلٰی مُحَمَّدٍ وَّعَلٰٓی اٰلِ مُحَمَّدٍ کَمَا صَلَّیْتَ عَلٰٓی اِبْرَاھِیْمَ وَعَلٰٓی اٰلِ اِبْرَاھِیْمَ اِنَّکَ حَمِیْدٌ مَّجِیْدٌ

اَللّٰھُمَّ بَارِکْ عَلٰی مُحَمَّدٍ وَّعَلٰٓی اٰلِ مُحَمَّدٍ کَمَا بَارَکْتَ عَلٰٓی اِبْرَاھِیْمَ وَعَلٰٓی اٰلِ اِبْرَاھِیْمَ اِنَّکَ حَمِیْدٌ مَّجِیْدٌ

 

درِ نبی پر پڑا رہوں گا پڑے ہی رہنے سے کام ہوگا
کبھی تو قسمت کھلے گی میری کبھی تو میرا سلام ہوگا

خلافِ معشوق کچھ ہوا ہے نہ کوئی عاشق سے کام ہوگا
خدا بھی ہوگا اُدھر ہی اے دِل جدھر وہ عالی مقام ہوگا

کیے ہی جاؤں گا عرضِ مطلب ملے گا جب تک نہ دل کا مطلب
نہ شامِ مطلب کی صبح ہوگی نہ یہ فسانہ تمام ہوگا

جو دل سے ہے مائلِ پیمبر یہ اُس کی پہچان ہے مقرر
کہ ہر دم اُس بے نوا کے لب پر درود ہوگا سلام ہوگا

اِسی توقع پہ جی رہا ہوں یہی تمنا جِلا رہی ہے
نگاہِ لطف و کرم نہ ہوگی تو مجھ کو جینا حرام ہوگا

ہوئی جو کوثر پہ باریابی تو کیف کی تیرے دھج یہ ہوگی

بغل میں مینا، نظر میں ساقی خوشی سے ہاتھوں میں جام ہوگا

در نبی پہ پڑا رہوں گا، پڑے رہنے سے کام ہو گا

کبھی تو قسمت کھلے گی میری کبھی تو میرا سلام ہو گا

زمین و زماں تمہارے لئے ، مکین و مکاں تمہارے لیے

سر سوئے روضہ جھکا پھر تجھ کو کیا

فاصلوں کو تکلف ہے ہم سے اگر ، ہم بھی بے بس نہیں ، بے سہارا نہیں

Comments
Exit mobile version